Breaking News

روشن مستقبل دہلی نے بلقیس بانو کے لیے اٹھائی آواز

اس مرتبہ پندرہ اگست کا دن آزادی کی خوشی لے کر آیا ہی تھا کہ بلقیس بانو کے مجرموں اور تین سال کی بچی کے ساتھ اہل خانہ کے تیرہ افراد کے قاتلوں کی رہائی کی خبر انصاف اور انسانیت پسند لوگوں کے دلوں پر قہر بن کے ٹوٹی۔

جہاں ایک طرف ملک کے وزیر اعظم لال قلعے سے عورتوں کی عظمت اور ان کے تحفظ پر خطاب کر رہے تھے، وہیں گجرات میں 2002 کے دنگوں کے درمیان بلقیس بانو اور اس کے اہل خانہ کو آتنک کا نشانہ بنانے والے مجرم آزاد کیے جا رہے تھے۔

طرفہ ستم یہ کہ انسانیت نے اس وقت دم توڑ دیا، جب ان قاتلوں اور ظالموں کا استقبال پھول اور ہار ڈال کر کیا گیا اور انھیں مٹھائیاں کھلائی گئیں۔ اس سے زیادہ تعجب کی بات تو یہ تھی کہ خود عورتوں نے عورت کی عزت تار تار کرنے والے درندوں کو استقبال کیا۔

روشن مستقبل، دہلی نے اس انسانیت سوز حادثے کی مذمت اور ان درندوں کی رہائی کے خلاف ٹویٹر پر ٹرینڈ کا اعلان کیا۔ ٹرینڈ کے لیے جمعہ کے دن تین بجے کا وقت متعین کیا گیا۔

اعلان سنتے ہی انسانیت پسند لوگوں نے ہیش ٹیگ #माफी_नहीं_फांसी_दो
کا استعمال کرتے ہوئے تقریباً ایک لاکھ اکتیس ہزار ٹویٹ کر کے انڈیا میں دوسرے نمبر پر ٹرینڈ کروا دیا۔

لوگوں کے اتنی کثرت کے ساتھ ٹویٹ کرنے اور آواز اٹھانے سے ظاہر ہوتا ہے کہ اس واقعے کے خلاف لوگوں میں کتنا غم اور غصہ ہے۔

روشن مستقبل دہلی کے ذمہ داران نے حکومت سے مانگ کی کہ ان لوگوں کی رہائی کے حکم کو خارج کرتے ہوئے ان درندوں کو یا تو پھانسی دی جائے یا دوبارہ جیل میں ڈالا جائے کیوں بی بی سی کو دیے گئے ایک انٹرویو میں بلقیس بانو نے ان کی رہائی پر نہ صرف اپنے تحفظ کو لےکر فکر مندی کا اظہار کیا ہے بلکہ بی بی سی کے مطابق اس کے اس اعتماد کا بھی خون ہوا ہے جو اس نے بھارتی عدلیہ پر کیا تھا۔

دانش وروں کی تشویش یہ بھی ہے کہ اس واقعے سے ملک کی سیکولر شبیہ تو غیر معمولی طور پر متاثر ہوئی ہی ہے، اس سے عالمی سطح پر مسلمانوں کے تئیں مذہبی اور نسلی امتیازات کا بھی پیغام گیا ہے جو کسی طور پر نیک فال نہیں۔

محمد شاہد علی مصباحی
روشن مستقبل دہلی

About चीफ एडिटर सैफुल्लाह खां अस्दक़ी

I'm Mohammad Saifullah । I'm Founder And National President Of Ghause Azam Foundation (NGO) । I'm Chief Editor Of GAF News Network And Islamic Teacher

Check Also

सभी समस्याओं का समाधान यहां हैः मौलाना मोहम्मद सैफुल्लाह ख़ां अस्दक़ी

*सभी समस्याओं का समाधान यहां हैः मौलाना मोहम्मद सैफुल्लाह ख़ां अस्दक़ी* *अपने परिवार, रिश्तेदार, दोस्त …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *